پیزا ڈیلیور کرنے والی ایک خاتون نے غصے میں آ کر اپنے کسٹمر کا انگوٹھا چبا کر

 خاتون نے پیزا ڈیلیوری کے موقع پر مشتعل کسٹمر کا انگوٹھا کاٹ ڈالا۔

میڈیا رپورٹس کے مطابق 35 سالہ جینیفر روچا، جو کہ ڈیلیورو نامی سروس سے منسلک ہیں، نے 36 سالہ اسٹیفن جینکنسن کا انگوٹھا کاٹ ڈالا جب ایلڈرشاٹ میں غلط پتے پر 57 پاؤنڈ کا پیزا پہنچایا گیا۔ پیزا ڈیلیوری کا واقعہ 14 دسمبر 2022 کو واقع ہوا۔

جینیفر روچا کو اس جرم کے لیے جیل بھیجا جا سکتا ہے۔ مقدمے سے معلوم ہوا کہ جب جینکنسن غلط پتے پر اپنی ڈیلیوری لینے گئے تو خاتون کے ساتھ ان کا جھگڑا شروع ہو گیا اور جب اس نے اپنا ہاتھ بلند کیا تو روچا نے اس کا انگوٹھا چبا کر کاٹ ڈالا۔

جینیفر روچا کو ونچسٹر کراؤن کورٹ میں بالقصد شدید جسمانی نقصان پہنچانے کے مقدمے کا سامنا کرنا تھا تاہم اب اس نے بغیر ارادے کے سنگین جسمانی نقصان کا اعتراف کر لیا ہے۔ وکیل نے عدالت کو بتایا کہ جینکنسن اس حملے سے مستقل طور پر معذور ہو گئے ہیں اور انھیں 11 گھنٹے کا آپریشن کرنا پڑا تھا۔

 

واقعے کو یاد کرتے ہوئے جینکنسن نے میڈیا کو بتایا کہ ’’مجھے صرف اتنا یاد ہے کہ میں اسے ہٹانے کی کوشش میں اس کا ہیلمٹ ہلا رہا تھا، اس نے پوری قوت کے ساتھ میرا انگوٹھا چبا کر الگ کر دیا اور اس سے خون کی دھار بہہ نکلی۔‘‘

جینکنسن کا کہنا تھا کہ انھیں شرٹ کے بٹن بند کرنے اور جوتوں کے فیتے باندھنے میں سخت مشکل پیش آئی، جس پر اس جیسی بنیادی مہارتیں انھیں دوبارہ سیکھنی پڑیں۔ جینکنسن پلمبر کے طور پر کام کر رہے تھے، اس واقعے کی وجہ سے وہ بے روزگار ہو گئے تھے

See also  Launch Your Business in Punjab! Get Interest-Free Loans with the Punjab Rozgar Scheme

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *